عائشہ گلالئی دونوں ہاتھوں سے مال کماتی رہیں: تہلکہ خیز انکشافات

پشاور:  عائشہ گلالئی کے اسسٹنٹ نے ایک اور پنڈورا باکس کھول دیا، اسسٹ نور زمان نے انکشاف کیا ہے عائشہ گلالئی دونوں ہاتھوں سے مال کماتی رہیں، بنوں تا سدہ خیل لنک روڈ پر منصوے میں عائشہ گلالئی نے 72 لاکھ وصول کئے۔

تفصیلات کے مطابق عمران خان اور تحریک انصاف سے فاصلوں کی حقیقی کہانی عائشہ گلالئی کے اسسٹنٹ نے سنا دی، عائشہ گلا لئی کے ذاتی معاون نے بتایا شمس القیوم اپنی صاحبزادی عائشہ گلالئی کو ملنے والے ترقیاتی منصوبوں سے مال بنایا کرتے، عائشہ گلالئی نے بنوں لنک روڈ تا سدہ خیل روڈ کی تعمیر کیلئے ملنے والے فنڈز سے 72 لاکھ وصول کئے، لکی مروت کے علاقے تجوڑی سے تری خیل روڈ کی تعمیر کے لئے ملنے والی رقم سے بھی 12 لاکھ وصول کئے گئے۔

نور زمان نے مزید بتایا کہ کرک سولر ٹیوب ویل کی تنصیب کیلئے ملنے والے پیسوں سے بھی 6 لاکھ وصول کئے، یہ سارے پیسے بنوں کے علاقے جنڈہ ڈومیل میں ساڑھے چار کنال کے گھر کی تعمیر میں استعمال کئے، بنوں میں کونسلر کو ٹکٹ دلوانے کیلئے عائشہ نے دس لاکھ روپے میں ڈیل کی، گلالئی کے والد سارے مالی لین دین کیا کرتے، انہوں نے والد کے ہمراہ گورنر پختونخوا سے کئی ملاقاتیں کیں، میں عائشہ اور شمس القیوم کے ہمراہ کئی مرتبہ گورنر ہاؤس گیا، شمس القیوم اور عائشہ گلالئی نے علیحدگی میں اقبال ظفر جھگڑا سے ملاقاتیں کیں، عائشہ گلالئی اپنے والد کے ذریعے امیر مقام کیساتھ مسلسل رابطے میں تھیں۔

عائشہ گلا لئی کے ذاتی معاون نے بتایا شمس القیوم این اے ون کا ٹکٹ لینے اور بیٹی کو وزیر داخلہ بنانے کے خواب دیکھا کرتے، گلالئی شمس القیوم کہتے کہ بیٹی کو وزیر داخلہ بنا کر میں گورنر بنوں گا اور سارے معاملات آپکے ذریعے چلاؤں گا، گلالئی بنوں میں تعمیر کئے جانے والے گھر کو عائشہ گلالئی نے اپنے اثاثوں میں بھی نہیں دکھایا۔

نورزمان کے پاس موجود دستاویز پر عائشہ گلالئی اور شمس القیوم کے دستخط بھی موجود ہیں جو الیکشن کمیشن کے گوشواروں پر موجود دستخطوں میں مماثلت کی تصدیق کرتے ہیں۔

Dunya-News

Share