جسٹس آصف کھوسہ کبھی عمران سے نہیں ملے، ترجمان سپریم کورٹ

Justice Asif Saeed Khosa

دوران سماعت جسٹس کھوسہ نے ریمارکس دیے تھے کہ اب سپریم کورٹ کیس سن رہی ہے، فریقین صبر کا مظاہرہ کریں، لاک ڈاون کی کال پر بھی دوبارہ غور کیا جائے، عدالتی آبزرویشنز کو غلط رنگ دیکر پیش کیا جا رہا ہے، ترجمان سپریم کورٹ کی وضاحت۔

اسلام آباد:  ترجمان سپریم کورٹ نے کہا ہے کہ جسٹس آصف سعید کھوسہ کی چئیرمین تحریک انصاف عمران خان سے کبھی ملاقات ہوئی نہ وہ انہیں ذاتی طور پر جانتے ہیں۔ جسٹس کھوسہ کے یکم نومبرکے ریمارکس کو انٹرویو کی صورت میں چلانا بدقسمتی ہے۔ یکم نومبر کی سماعت کے دوران عدالتی آبزویشن سننے والے افراد، وکلاء اور صحافی گواہ ہیں۔ ترجمان نے کہا کہ انٹرویو کے مطابق عمران خان کو جسٹس آصف کھوسہ نے درخواست کی کہ وہ پانامہ سکینڈل کی سپریم کورٹ میں درخواست دائر کریں، ایسے الزامات مکمل طور پر بے بنیاد اور جھوٹے ہیں۔ حقیقت یہ ہے کہ یکم نومبر2016ء کو سپریم کورٹ کے لارجر بنچ کے سامنے پانامہ کیس سماعت کیلئے مقرر ہوا، جسٹس آصف کھوسہ بھی اس کا حصہ تھے۔ دوران سماعت جسٹس کھوسہ نے ریمارکس دیے تھے کہ اب سپریم کورٹ کیس سن رہی ہے، فریقین صبر کا مظاہرہ کریں، لاک ڈاون کی کال پر بھی دوبارہ غور کیا جائے۔

Dunya-News

Share