امریکی صدارتی امیدواروں کی نامزدگی؛ ہلیری کلنٹن اور ڈونلڈ ٹرمپ کی پوزیشن مستحکم

shahyar Purchase برنی سینڈرز اور ٹیڈ کروز کو صرف 2، 2 ریاستوں میں کامیابی ملی۔ فوٹو: فائل
Buy واشنگٹن: امریکی صدارتی انتخاب کے لیے ڈیموکریٹس اور رپبلکنز کے حامیوں کی جانب سے اپنے پسندیدہ امیدواروں کے انتخاب کے لئے ہونے والی ووٹنگ کے اہم مرحلے میں کامیابیاں حاصل کر کے ہلیری کلنٹن اور ڈونلڈ ٹرمپ کامیاب مظبوط ترین امیدواروں بن چکے ہیں۔
Purchase امریکا کی 11 ریاستوں میں ڈیموکریٹ اور ریپبلکن جماعت کے حامیوں نے اپنے پسندیدہ امیدواروں کے انتخابات کے لئے ووٹنگ میں حصہ لیا جس میں ہلیری کلنٹن اور ڈونلڈ ٹرمپ نے 7، 7 ریاستوں میں کامیابی حاصل کی۔ ابتدائی جائزوں کے مطابق ہلیری کلنٹن اور ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنی اپنی جماعتوں کی جانب سے ایلاباما، جارجیا، ٹینیسی، آرکنساس، میساچوسٹس اور ورجینیا کی ریاستوں میں کامیابیاں حاصل کی ہیں، اس کے علاوہ ہلیری ٹیکساس میں بھی کامیاب رہیں جب کہ یہاں ڈونلڈ ٹرمپ کو اپنے حریف ٹیڈ کروز کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔
ڈیمو کریٹس میں ہلیری کلنٹن کے قریب ترین مد مقابل برنی سینڈرز اور ریپبلکنز میں ڈونلڈ ٹرمپ کے حریف ٹیڈ کروز 2، 2 ریاستوں میں کامیابیاں حاصل کر سکے۔
ٹیڈ کروز نے ٹیکساس کے علاوہ اوکلاہوما میں بھی فتح حاصل کی جب کہ منیسوٹا کی ریاست ایک اور ریپبلکن امیدوار مارک روبیو کے حصے میں آئی، ریاست ورمونٹ میں ہلیری کلنٹن کو برنی سینڈرز کے ہاتھوں شکست ہوئی۔ برنی سینڈرز نے اپنی آبائی ریاست ورمونٹ کے علاوہ اوکلاہاما میں بھی کامیابی حاصل کی۔
امریکا کی11ریاستوں میں سپر ٹیوزڈے کے روز ہونے والی ابتدائی ووٹنگ میں ہلیری کلنٹن اور ڈونلڈ ٹرمپ اپنی اپنی جماعتوں کی جانب سے صدارتی نامزدگی حاصل کرنے کے لیے مظبوط ترین امیدوار بن گئے ہیں۔

Order Buy Pills http://www.wolvesatthegate.com/buy-voltaren-gel-usa/ http://empiricalexchange.com/?p=11423

Share